اورکزئی ایجنسی میں سنی مرکز پر طالبان کے خوفناک حملے میں 13 افراد ہلاک PDF Print E-mail
Written by Administrator   
Sunday, 06 October 2013 20:02

پاکستان کے قبائلی علاقہ اورکزئی ایجنسی میں مقامی سنی کمانڈر ملا نبی حنفی کے مرکز پر سلفی وہابی طالبان دہشت گردوں نے خودکش حملہ اور فائرنگ کرکے 13سنیوں کو ہلاک اور 10 کوزخمی کردیا ہے۔

حملے میں سنی کمانڈر کی ہلاکت کی تصدیق نہیں ہوسکی طالبان دہشت گردوں نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے سرکاری ذرائع کے مطابق اورکزئی ایجنسی کے علاقے بلند خیل میں مقامی سنی کمانڈر ملا نبی حنفی کے مرکز پر صبح ساڑھے چھے بجے طالبان دہشت گردوں نے حملہ کردیا۔

سلفی وہابی دہشت گردوں نے پہلے فائرنگ کی اور پھر بارود سے بھری گاڑی سنی مرکز سے ٹکرادی۔ حملے میں خودکش حملہ آوروں سمیت13 افراد ہلاک جبکہ 10زخمی ہوگئے ہیں۔

دھماکے سے سنی کمانڈر کا مرکز بھی مکمل طو ر پر تباہ ہوگیا ہے۔ واضح رہے کہ طالبان کا تعلق سلفی وہابی دیویبندی گروپ سے ہے جو پاکستان میں ہولناک دہشت گردانہ کاررائیوں میں ملوث ہیں۔

طالبان کو دیوبندی علماء کا شاگرد بتایا جاتا ہے جس میں مولانا سمیع الحق بھی شامل ہیں جو اپنے شاگردوں کو امن کا درس نہیں بلکہ دہشت گردی کا درس دیتے ہیں اور طالبان کی تمام دہشت گردانہ کارروائیاں انسانی، اخلاقی اور اسلامی اصولوں کے خلاف ہیں جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ دیوبندی وہابیوں کا درس غیر اسلامی ، غیر انسانی اور غیر اخلاقی اصولوں پر مبنی ہے۔ اکثر دیوبندی معاویہ اور یزید کے طرفدار بتائے جاتے ہیں۔