شامی شہری کا دل چبانے پر سلفی وہابی دہشت گردوں کی مذمت کا سلسلہ جاری PDF Print E-mail
Written by Administrator   
Friday, 17 May 2013 18:14

شام میں سلفی وہابی دہشت گردوں نے یزيد کی دادی اور معاویہ کی ماں ہندہ جگر خوارہ کی یاد تازہ کرتے ہوئے شام کے ایک مردہ شہری کا سینہ چاک کرکے اس کا دل نکال کر چبایا ہے جس کی عالمی پیمانے پر شدید مذمت کا سلسلہ جاری ہے سلفی وہابی دہشت گرد عمر الفاروق گروہ کا کمانڈر بتایا جاتا ہے۔

ایک ویڈیو میں شام میں ایک سلفی وہابی کو ایک مردہ شامی فوجی کا دل نکال کر اسے کھاتے ہوئے دکھایا گیا ہے جس کی عالمی پیمانے پر سخت مذمت کی جا رہی ہے۔

حقوق انسانی کے ادارے ہیومن رائٹس واچ نے سلفی دہشت گرد کی شناخت ابو صقر کے طور پر کی ہے ہیومن رائٹس واچ کے مطابق ابو صقر دہشت گرد گروپ عمر الفاروق بریگیڈ کا رہنما ہے۔ جو حمص شہر کا معروف دہشت گرد گروہ ہے۔

ہیومن رائٹس واچ نے اس عمل کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔ واضح رہے کہ شام میں سلفی وہابی دہشت گردوں نے حال ہی میں پیغمبر اسلام (ص) کے برگزيدہ اور جلیل القدر صحابی حضرت حجر بن عدی کی قبر کی بے حرمتی اور توہین کی اور قبر سے صحابی رسول (ص) کے جنازے کو لیکر کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا، سلفی وہابی ، پیغمبر اسلام حضرت محمد مصطفی کےصحابہ ، ازواج مطہرات اور اولاد اطہار کے گہرے دشمن ہیں، سلفیوں نے سعودی عرب میں جنت البقیع میں پیغمبر اسلام کے آل اطہار اور ان کے تمام صحابہ کے روضوں کو شہید کردیا اور وہ پیغمبر اسلام کے گنبد کو بھی شہید کرنا چاہتے تھے لیکن اس موقع پر انھیں عالم اسلام میں رونما ہونے والے شدید احتجاج کا سامنا کرنا پڑا، اب سعودی سلفیوں نے اکثر مسلمانوں کو سلفی اور وہابی عقائد کی طرف موڑنا شروع کردیا ہے تاکہ جب دنیا میں سبھی سلفی ہوجائیں تو اس وقت ان کے لئے نبی کریم (ص)کے روضہ کو شہید کرنا آسان ہوجائے۔

لیکن مسلمان آجکل سلفی وہابیوں سے سخت بیزار اور متنفر ہیں اور ان کی گمراہ کن تبلیغات کا ڈٹ کرمقابلہ کررہے ہیں لیکن سلفی وہابیوں کو سعودی عرب سے بڑے پیمانے پر مالی تعاون مل رہا ہے اور سعودی شاہی خاندان اس گمراہ فرقہ کی پشتپناہی کررہا ہے۔

Last Updated on Friday, 17 May 2013 18:17